53

براڈ شیٹ اسکینڈل؛ وزیر داخلہ نے عظمت سعید پر اپوزیشن اعتراضات مسترد کردیے

کراچی: 

وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کا قائداعظم کے مزار پر خطاب کرنا قیامت کی نشانی ہے، گولڈن ٹیمپل کا دورہ کرنے والے کیسے مزار قائد پر بو ل سکتے ہیں۔ 

کراچی کوسٹ گارڈز ہیڈ کوارٹرز میں میڈیا سے  بات کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کے پاس اب کہنے کے لیے کچھ نہیں، اپوزیشن کے ختم نبوت، کشمیر اور اسرائیل تین کیس ہیں، عمران خان نے جتنا یواین میں کشمیر کا کیس لڑا کسی اور نے نہیں لڑا، وزیراعظم نے مودی کو ہٹلر کے نام سے متعارف کرایا ہے، مجھ سے زیادہ اس ملک میں کشمیر ایشو کو کوئی نہیں سمجھتا۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان کا قائداعظم کے مزار پر خطاب کرنا قیامت کی نشانی ہے، گولڈن ٹیمپل کا دورہ کرنے والے کیسے مزار قائد پر بو ل سکتے ہیں، تاریخ پڑھیں انہوں نے قیام پاکستان سے پہلے قائداعظم کو کیا کیا کہا تھا، آپ جو مرضی کر لیں آپ کا دور اقتدار نہیں آئے گا، مولانا سمجھ رہے ہیں (ن) لیگ کے ساتھ مل کر سیاسی کردار بن جائے گا، ان کی 5 یا 6 سیٹیں ہیں ان کا کوئی رول نہیں بنے گا۔

وزیرداخلہ نے کہا کہ ملک میں معیشت بہتری کی جانب ہے اور پی ڈی ایم والے نہیں چاہتے ہم ترقی کریں، میں نے پہلے بھی کہا تھا کہ یہ لوگ سینیٹ انتخابات میں حصہ لیں گے، استعفے دیئے گئے نہ ہی سینیٹ انتخابات سے باہرہورہے ہیں، سینیٹ اوپن بیلٹ کے ذریعے انتخابات کافیصلہ عدالت کرے گی، جو حشر الیکشن کمیشن کے باہر احتجاج کا ہوا وہی لانگ مارچ کا ہوگا، اسرائیل مارچ میں وقت ضائع کیا گیا۔

وفاقی وزیر نے براڈ شیٹ انکوائری کمیٹی کے سربراہ عظمت سعید پر اپوزیشن کے اعتراضات مسترد کرتے ہوئے کہا کہ مریم نواز کچھ کہنے سے پہلے پڑھ لیا کریں، شیخ عظمت سعید ایک بہت بڑا نام ہے، یہ ان پر بھی اعتراض کررہے ہیں، مجھے بتائیں کہ کیا شیخ عظمت کبھی نیب کے پراسیکیوٹر رہے ہیں؟، مریم کے لئے یہ خبر  کافی ہے کہ شیخ عظمت نے والیم ٹین پڑھی ہوئی ہے، آئندہ دنوں میں براڈ شیٹ سے متعلق مزید انکشافات ہوں گے اور  براڈ شیٹ پاکستان کا پاناما ٹو ثابت ہوگا، ان انکشافات میں (ن) لیگ کے مزید اثاثے سامنے آسکتے ہیں، 2 ارب روپے سے زائد آئل اسمگلنگ کو اڑا کر رکھ دیں گے، براڈ شیٹ اصل معاملہ ہے،ملک قیوم کا انتظار نہ کریں، براڈ شیٹ سے جو نکلے گا اپوزیشن کو لپیٹ میں لے گا، براڈ شیٹ کا سربراہ عظمت سعید کو نہ بنائیں تو ملک قیوم کو بنائیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ اس وقت ملک میں ریڈ الرٹ ہے، عالمی طاقتیں پاکستان اور سی پیک کو ڈسٹرب کرنا چاہتی ہیں، خفیہ ایجنسیوں نے بہت سے حساس واقعات کو ہونے سے روکا، امن دشمن عناصر کی پوری کوشش ہے کراچی میں بدامنی پیداہو، سندھ حکومت سیف سٹی کیلئے رینجرز سے تعاون کرے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں